aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

غم میں عہد شباب جاتا ہے

میر کلو عرش

غم میں عہد شباب جاتا ہے

میر کلو عرش

MORE BYمیر کلو عرش

    غم میں عہد شباب جاتا ہے

    آسماں خاک میں ملاتا ہے

    کون گل بہر سیر آتا ہے

    باغ پھولا نہیں سماتا ہے

    عرش پر بھی غبار جاتا ہے

    دل جو وحشت میں خاک اڑاتا ہے

    جان دیتا ہے سبزۂ خط پر

    خضر ہر روز زہر کھاتا ہے

    تیغ قاتل جو ہو گئی بے آب

    زخم پانی مگر چراتا ہے

    زندے مرتے ہیں مردے جیتے ہیں

    جب وہ رشک مسیح گاتا ہے

    سحر شام وصل ہے شب گور

    موت آتی ہے یار جاتا ہے

    اچھی پڑتی ہے جب کوئی تلوار

    دہن زخم مسکراتا ہے

    خون عشاق کا اٹھا بیڑا

    بے سبب کب وہ پان کھاتا ہے

    جگر سنگ ہو جہاں پانی

    وہ وہاں مجھ کو آزماتا ہے

    تو جو گل ہے تو میں بھی شبنم ہوں

    مجھے ہنسنا ترا رلاتا ہے

    خوش یہ مرنے سے ہوں مرا لاشہ

    گور میں بھی نہیں سماتا ہے

    لالۂ کوہ سے ہوا ثابت

    خون فریاد جوش کھاتا ہے

    لاکھ تقلید کیجئے اے عرشؔ

    پر کب انداز میرؔ آتا ہے

    مأخذ:

    Deewan-e-Arsh (Pg. ebook-189 page-190)

    • مصنف: میر کلو عرش
      • اشاعت: 1987
      • ناشر: انجمن ترقی اردو (ہند)، دہلی
      • سن اشاعت: 1987

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے