aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہنستے ہوئے ماں باپ کی گالی نہیں کھاتے

منور رانا

ہنستے ہوئے ماں باپ کی گالی نہیں کھاتے

منور رانا

MORE BYمنور رانا

    ہنستے ہوئے ماں باپ کی گالی نہیں کھاتے

    بچے ہیں تو کیوں شوق سے مٹی نہیں کھاتے

    تم سے نہیں ملنے کا ارادہ تو ہے لیکن

    تم سے نہ ملیں گے یہ قسم بھی نہیں کھاتے

    سو جاتے ہیں فٹ پاتھ پہ اخبار بچھا کر

    مزدور کبھی نیند کی گولی نہیں کھاتے

    بچے بھی غریبی کو سمجھنے لگے شاید

    اب جاگ بھی جاتے ہیں تو سحری نہیں کھاتے

    دعوت تو بڑی چیز ہے ہم جیسے قلندر

    ہر ایک کے پیسوں کی دوا بھی نہیں کھاتے

    اللہ غریبوں کا مددگار ہے راناؔ

    ہم لوگوں کے بچے کبھی سردی نہیں کھاتے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے