aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

کس کو مہرباں کہئے کون مہرباں اپنا

ناطق گلاوٹھی

کس کو مہرباں کہئے کون مہرباں اپنا

ناطق گلاوٹھی

MORE BYناطق گلاوٹھی

    کس کو مہرباں کہئے کون مہرباں اپنا

    وقت کی یہ باتیں ہیں وقت اب کہاں اپنا

    اب جہاں میں باقی ہے آہ سے نشاں اپنا

    اڑ گئے دھوئیں اپنے رہ گیا دھواں اپنا

    اے خدا گلہ سن لے اپنی بے نیازی کا

    آج حال کہتا ہے ایک بے زباں اپنا

    سو کے رات کاٹی ہے بے کسی کے پہلو میں

    چاندنی نے دیکھا ہے میرے گھر سماں اپنا

    گھر تو اب بھی دنیا کے دھوپ ہی میں بنتے ہیں

    کیوں اٹھا نہیں لیتا سایہ آسماں اپنا

    ہم سفر کے قصہ کو ختم کر کے چلتے ہیں

    راستہ بدلتی ہے اپنی داستاں اپنا

    نامراد دنیا میں رہ کے خوب بھر پائے

    چل نکل چلیں اے دل کچھ نہیں یہاں اپنا

    جانتے ہوئے ناطقؔ ہم وطن کی حالت کو

    ڈھونڈتے پھریں جا کر کس لئے مکاں اپنا

    مأخذ:

    Deewan-e-Natiq (Pg. ebook-36 page-24)

    • مصنف: ناطق گلاوٹھی
      • اشاعت: 1976
      • ناشر: محمد عبد الحلیم
      • سن اشاعت: 1976

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے