aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

پلا ساقی بہار آئے نہ آئے

جلیل مانک پوری

پلا ساقی بہار آئے نہ آئے

جلیل مانک پوری

MORE BYجلیل مانک پوری

    پلا ساقی بہار آئے نہ آئے

    گھٹا پھر بار بار آئے نہ آئے

    تجھے ہم دیکھنے آئیں گے سو بار

    کوئی دیوانہ وار آئے نہ آئے

    کہے جائیں گے درد دل ہم اپنا

    کسی کو اعتبار آئے نہ آئے

    وہ آ جائیں ادھر کھولے ہوئے بال

    نسیم مشک بار آئے نہ آئے

    تمہیں آرام سے سونا مبارک

    مجھے شب بھر قرار آئے نہ آئے

    ہوائے شوق میں اب اڑ چلے ہم

    ہوائے کوئے یار آئے نہ آئے

    ترے دل میں مسرت کے کھلیں پھول

    مرے دل میں بہار آئے نہ آئے

    جلیلؔ اب مے کشی کا لطف اٹھاؤ

    پھر ابر نو بہار آئے نہ آئے

    مأخذ:

    Kainat-e-Jalil Manakpuri (Pg. 339)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے