دھیان میں آ کر بیٹھ گئے ہو تم بھی ناں

عنبرین حسیب عنبر

دھیان میں آ کر بیٹھ گئے ہو تم بھی ناں

عنبرین حسیب عنبر

MORE BYعنبرین حسیب عنبر

    دھیان میں آ کر بیٹھ گئے ہو تم بھی ناں

    مجھے مسلسل دیکھ رہے ہو تم بھی ناں

    دے جاتے ہو مجھ کو کتنے رنگ نئے

    جیسے پہلی بار ملے ہو تم بھی ناں

    ہر منظر میں اب ہم دونوں ہوتے ہیں

    مجھ میں ایسے آن بسے ہو تم بھی ناں

    عشق نے یوں دونوں کو آمیز کیا

    اب تو تم بھی کہہ دیتے ہو تم بھی ناں

    خود ہی کہو اب کیسے سنور سکتی ہوں میں

    آئینے میں تم ہوتے ہو تم بھی ناں

    بن کے ہنسی ہونٹوں پر بھی رہتے ہو

    اشکوں میں بھی تم بہتے ہو تم بھی ناں

    میری بند آنکھیں تم پڑھ لیتے ہو

    مجھ کو اتنا جان چکے ہو تم بھی ناں

    مانگ رہے ہو رخصت اور خود ہی

    ہاتھ میں ہاتھ لئے بیٹھے ہو تم بھی ناں

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین,

    فہد حسین

    دھیان میں آ کر بیٹھ گئے ہو تم بھی ناں فہد حسین

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے