Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

نئے دنوں کے نئے صحیفوں میں ذکر مہر و وفا نہیں ہے

انور علیمی

نئے دنوں کے نئے صحیفوں میں ذکر مہر و وفا نہیں ہے

انور علیمی

MORE BYانور علیمی

    نئے دنوں کے نئے صحیفوں میں ذکر مہر و وفا نہیں ہے

    محبتوں کی جسارتوں کی سزا نہیں ہے جزا نہیں ہے

    نگاہ کے شوخ پن کو بیگانگی کا آسیب ڈس گیا ہے

    مغائرت کا فسوں زدہ دل جنوں کے شایاں رہا نہیں ہے

    کوئی بھی سجنی کسی بھی ساجن کی منتظر ہے نہ مضطرب ہے

    تمام بام اور در بجھے ہیں کہیں بھی روشن دیا نہیں ہے

    حیات کے پر جمال منظر پہ کوئی نطق اور قلم نہ مہکا

    نیا قلم کار ندرت فن کی خوشبوؤں پر فدا نہیں ہے

    یہیں پہ کل ہم سے تم سے یارو مودتوں کو جنم ملا تھا

    دیار یاراں وہی ہے لیکن کوئی وفا آشنا نہیں ہے

    وصال گھڑیوں فراق لمحوں کے غم، طرب سب فسانچے ہیں

    ملن کا اور نا ملن کا سکھ دکھ دلوں کی تہہ میں چھپا نہیں ہے

    میں دیر و کعبہ میں ڈھونڈ آیا تو میں نے پایا یہ علم و عرفاں

    میں ایک انساں ہوں میری ہستی سے کوئی ہستی ورا نہیں ہے

    وہ چشم بینا کی منزلیں تھیں یہ کور چشمی کے مرحلے ہیں

    پرانی پہچان مر گئی ہے کسی سے کوئی ملا نہیں ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Beesveen Sadi Ki Behtareen Ishqiya Ghazlen (Pg. 55)
    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    મધ્યકાલથી લઈ સાંપ્રત સમય સુધીની ચૂંટેલી કવિતાનો ખજાનો હવે છે માત્ર એક ક્લિક પર. સાથે સાથે સાહિત્યિક વીડિયો અને શબ્દકોશની સગવડ પણ છે. સંતસાહિત્ય, ડાયસ્પોરા સાહિત્ય, પ્રતિબદ્ધ સાહિત્ય અને ગુજરાતના અનેક ઐતિહાસિક પુસ્તકાલયોના દુર્લભ પુસ્તકો પણ તમે રેખ્તા ગુજરાતી પર વાંચી શકશો

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے