aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

یہ آنکھ کیوں ہے یہ ہاتھ کیا ہے

منیر نیازی

یہ آنکھ کیوں ہے یہ ہاتھ کیا ہے

منیر نیازی

MORE BYمنیر نیازی

    یہ آنکھ کیوں ہے یہ ہاتھ کیا ہے

    یہ دن ہے کیا چیز رات کیا ہے

    فراق خورشید و ماہ کیوں ہے

    یہ ان کا اور میرا ساتھ کیا ہے

    گماں ہے کیا اس صنم کدے پر

    خیال مرگ و حیات کیا ہے

    فغاں ہے کس کے لیے دلوں میں

    خروش دریائے ذات کیا ہے

    فلک ہے کیوں قید مستقل میں

    زمیں پہ حرف نجات کیا ہے

    ہے کون کس کے لیے پریشاں

    پتہ تو دے اصل بات کیا ہے

    ہے لمس کیوں رائیگاں ہمیشہ

    فنا میں خوف ثبات کیا ہے

    منیرؔ اس شہر غم زدہ پر

    ترا یہ سحر نشاط کیا ہے

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے