aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

گھر داماد کی مشکلیں

حماد حسن

گھر داماد کی مشکلیں

حماد حسن

MORE BYحماد حسن

    جانا تھا سسرال سے مشکل رہنے میں رسوائی تھی

    ہم نے تیرے جہاں میں مولا کیسی قسمت پائی تھی

    ساس سسر کی خدمت میں ہمیں سارا دن لگ جاتا تھا

    پھر بھی ہم کو بیوی نے ہر بات پہ ڈانٹ پلائی تھی

    ہم ہی تھے تقدیر کے مارے جو اس گھر میں بیاہے گئے

    ورنہ بہت سے دامادوں کی لاٹری بھی نکل آئی تھی

    اب روتے ہیں اس دن کو جب ہاں کہہ کر مسکائے تھے

    کیا معلوم تھا اس مسکان سے ہم نے غلامی پائی تھی

    بن گئے گھر داماد تو پھر بھلا کون ہمیں عزت دیتا

    ساس پٹائی کر کے گئی تو سسر نے ڈانٹ پلائی تھی

    عزت نفس کا سودا کر کے خون کے گھونٹ پئے ہر دم

    بھیگی بلی بن کر ہم نے اپنی عمر بتائی تھی

    مأخذ:

    (Pg. 47)

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے