Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
Nazir Fatehpuri's Photo'

نذیر فتح پوری

1946 | پونے, انڈیا

نذیر فتح پوری

اشعار 1

کون اب اس کو اجڑنے سے بچا سکتا ہے

ہائے وہ گھر کہ جو اپنے ہی مکیں کا نہ رہا

 

غزل 11

نظم 9

دوہا 3

دھرتی کو دھڑکن ملی ملا سمے کو گیان

میرے جب جب لب کھلے اٹھا کوئی طوفان

  • شیئر کیجیے

بیتے جس کی چھاؤں میں موسم کے دن رات

اپنے من کی آس کا ٹوٹ گیا وہ پات

  • شیئر کیجیے

کاغذ کو میں نے دیا شبدوں کا وردان

گیت غزل کے روپ میں مجھے ملا سمان

  • شیئر کیجیے
 

کتاب 95

"پونے" کے مزید مصنفین

 

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے