Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

بے نشہ بہک رہا ہوں کب سے

شہرت بخاری

بے نشہ بہک رہا ہوں کب سے

شہرت بخاری

MORE BYشہرت بخاری

    بے نشہ بہک رہا ہوں کب سے

    دوزخ ہوں دہک رہا ہوں کب سے

    پتھر ہوئے کان موت کے بھی

    سولی پہ لٹک رہا ہوں کب سے

    جھڑتی نہیں گرد آگہی کی

    دامن کو جھٹک رہا ہوں کب سے

    لاہور کے کھنڈروں میں یا رب

    بلبل سا چہک رہا ہوں کب سے

    روشن نہ ہوئیں غزل کی شمعیں

    شعلہ سا بھڑک رہا ہوں کب سے

    تاریک ہیں راستے وفا کے

    سورج سا چمک رہا ہوں کب سے

    ٹوٹا نہ فسردگی کا جادو

    غنچہ سا چٹک رہا ہوں کب سے

    جلتا نہیں بے کسی کا خرمن

    بجلی سا لپک رہا ہوں کب سے

    اس حرص و ہوا کی تیرگی میں

    سونا سا دمک رہا ہوں کب سے

    سنسان ہے وادئی تکلم

    بادل سا کڑک رہا ہوں کب سے

    بستی کوئی ہو تو مل بھی جائے

    صحرا میں بھٹک رہا ہوں کب سے

    گلچیں کوئی ہو تو قدر جانے

    جنگل میں مہک رہا ہوں کب سے

    ہاں اے غم عشق مجھ کو پہچان

    دل بن کے دھڑک رہا ہوں کب سے

    پیمانۂ عمر کی طرح سے

    ہر لمحہ چھلک رہا ہوں کب سے

    معلوم یہ اب ہوا کہ شہرتؔ

    دیوانہ ہوں بک رہا ہوں کب سے

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    મધ્યકાલથી લઈ સાંપ્રત સમય સુધીની ચૂંટેલી કવિતાનો ખજાનો હવે છે માત્ર એક ક્લિક પર. સાથે સાથે સાહિત્યિક વીડિયો અને શબ્દકોશની સગવડ પણ છે. સંતસાહિત્ય, ડાયસ્પોરા સાહિત્ય, પ્રતિબદ્ધ સાહિત્ય અને ગુજરાતના અનેક ઐતિહાસિક પુસ્તકાલયોના દુર્લભ પુસ્તકો પણ તમે રેખ્તા ગુજરાતી પર વાંચી શકશો

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے