aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

دل تنہا میں اب احساس محرومی نہیں شاید

حبیب حیدرآبادی

دل تنہا میں اب احساس محرومی نہیں شاید

حبیب حیدرآبادی

MORE BYحبیب حیدرآبادی

    دل تنہا میں اب احساس محرومی نہیں شاید

    تری دوری بھی اب دل کے لئے دوری نہیں شاید

    جہاں دن میں اندھیرا ہو وہاں راتوں کا کیا کہنا

    یہاں کے چاند سورج میں چمک ہوتی نہیں شاید

    میں جب بستر سے اٹھتا ہوں تو یوں محسوس ہوتا ہے

    مرے اندر کی دنیا رات بھر سوتی نہیں شاید

    یہ کس صحرا کے کس گوشے میں خیمہ تان بیٹھے ہیں

    کسی بھی سمت کوئی رہ گزر جاتی نہیں شاید

    ہم اپنی زندگی کی دھوپ میں تپنے کے عادی ہیں

    ہمیں ٹھنڈی ہوا برسوں سے راس آتی نہیں شاید

    حبیبؔ اس زندگی کے پیچ و خم سے ہم بھی نالاں ہیں

    ہمیں جھوٹے نگینوں کی چمک بھاتی نہیں شاید

    مأخذ:

    Shora-e-London (Pg. 75)

    • مصنف: Johar Zahiri
      • اشاعت: 1985
      • ناشر: Books From India (U.K) Ltd. 45, Museum Street,Londan W.C-1
      • سن اشاعت: 1985

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے