aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہم ان کے ستم کو بھی کرم جان رہے ہیں

کنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

ہم ان کے ستم کو بھی کرم جان رہے ہیں

کنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

MORE BYکنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

    ہم ان کے ستم کو بھی کرم جان رہے ہیں

    اور وہ ہیں کہ اس پر بھی برا مان رہے ہیں

    یہ لطف تو دیکھو کہ وہ محفل میں مری سمت

    نگراں ہیں کہ جیسے مجھے پہچان رہے ہیں

    ہم کو بھی تو واعظ ہے بد و نیک میں تمیز

    ہم بھی تو کبھی صاحب ایمان رہے ہیں

    ممکن ہے کہ اک روز تری زلف بھی چھو لیں

    وہ ہاتھ جو مصروف گریبان رہے ہیں

    یہ سچ ہے کہ بندے کو خدا دہر میں یوں تو

    مانا نہیں جاتا ہے مگر مان رہے ہیں

    وہ آئے ہیں اس طور سے خلوت میں مرے پاس

    جیسے کہ نہ آنے پہ پشیمان رہے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے