کل اے آشوب نالہ آج نہیں

قائم چاندپوری

کل اے آشوب نالہ آج نہیں

قائم چاندپوری

MORE BYقائم چاندپوری

    کل اے آشوب نالہ آج نہیں

    آج ہنگامہ پر مزاج نہیں

    غیر اس کے کہ خوب روئیے اور

    غم دل کا کوئی علاج نہیں

    اب بھی قیمت ہے دل کی گوشۂ چشم

    اتنی یہ جنس بے رواج نہیں

    شہ کو بھی چاہئے ہے گور و کفن

    کون ہے جس کو احتیاج نہیں

    دل سے بس ہاتھ اٹھا تو اب اے عشق

    دہ ویران پر خراج نہیں

    دو جہاں بھی ملیں تو بس ہے ہمیں

    یاں کچھ اتنی تو احتیاج نہیں

    کر نہ جرأت تو اے طبیب کہ یہ

    دل کا دھڑکا ہے اختلاج نہیں

    میں تو قائمؔ کہے تھا تجھ سے آہ

    دل نازک ہے یہ زجاج نہیں

    مأخذ :
    • Deewan-e-Qaem Chandpuri (Rekhta Website)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے