aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

یوں توڑ نہ مدت کی شناسائی ادھر آ

مظفر حنفی

یوں توڑ نہ مدت کی شناسائی ادھر آ

مظفر حنفی

MORE BYمظفر حنفی

    یوں توڑ نہ مدت کی شناسائی ادھر آ

    آ جا مری روٹھی ہوئی تنہائی ادھر آ

    مجھ کو بھی یہ لمحوں کا سفر چاٹ رہا ہے

    مل بانٹ کے رو لیں اے مرے بھائی ادھر آ

    اے سیل روان ابدی زندگی نامی

    میں کون سا پابند ہوں ہرجائی ادھر آ

    اس نکہت و رعنائی سے کھائے ہیں کئی زخم

    اے تو کہ نہیں نکہت و رعنائی ادھر آ

    اعصاب کھنچے جاتے ہیں اب شام و سحر میں

    ہونے ہی کو ہے معرکہ آرائی ادھر آ

    سنتا ہوں کہ تجھ کو بھی زمانے سے گلہ ہے

    مجھ کو بھی یہ دنیا نہیں راس آئی ادھر آ

    میں راہ نماؤں میں نہیں مان مری بات

    میں بھی ہوں اسی دشت کا سودائی ادھر آ

    مأخذ:

    kamaan (Pg. 313)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے