aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

آنکھوں سے کوئے یار کا منظر نہیں گیا

حسن عباس رضا

آنکھوں سے کوئے یار کا منظر نہیں گیا

حسن عباس رضا

MORE BYحسن عباس رضا

    آنکھوں سے کوئے یار کا منظر نہیں گیا

    حالانکہ دس برس سے میں اس گھر نہیں گیا

    اس نے مذاق میں کہا میں روٹھ جاؤں گی

    لیکن مرے وجود سے یہ ڈر نہیں گیا

    سانسیں ادھار لے کے گزاری ہے زندگی

    حیران وہ بھی تھی کہ میں کیوں مر نہیں گیا

    شام وداع لاکھ تسلی کے باوجود

    آنکھوں سے اس کی دکھ کا سمندر نہیں گیا

    اس گھر کی سیڑھیوں نے صدائیں تو دیں مگر

    میں خواب میں رہا کبھی اوپر نہیں گیا

    بچوں کے ساتھ آج اسے دیکھا تو دکھ ہوا

    ان میں سے کوئی ایک بھی ماں پر نہیں گیا

    پیروں میں نقش ایک ہی دہلیز تھی حسنؔ

    اس کے سوا میں اور کسی در نہیں گیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے