Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

تم حقیقت نہیں ہو حسرت ہو

جون ایلیا

تم حقیقت نہیں ہو حسرت ہو

جون ایلیا

MORE BYجون ایلیا

    تم حقیقت نہیں ہو حسرت ہو

    جو ملے خواب میں وہ دولت ہو

    میں تمہارے ہی دم سے زندہ ہوں

    مر ہی جاؤں جو تم سے فرصت ہو

    تم ہو خوشبو کے خواب کی خوشبو

    اور اتنی ہی بے مروت ہو

    تم ہو پہلو میں پر قرار نہیں

    یعنی ایسا ہے جیسے فرقت ہو

    تم ہو انگڑائی رنگ و نکہت کی

    کیسے انگڑائی سے شکایت ہو

    کس طرح چھوڑ دوں تمہیں جاناں

    تم مری زندگی کی عادت ہو

    کس لئے دیکھتی ہو آئینہ

    تم تو خود سے بھی خوبصورت ہو

    داستاں ختم ہونے والی ہے

    تم مری آخری محبت ہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے