aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

خیال و خواب کو پابند خوئے یار رکھا

محسن اسرار

خیال و خواب کو پابند خوئے یار رکھا

محسن اسرار

MORE BYمحسن اسرار

    خیال و خواب کو پابند خوئے یار رکھا

    سو دل کو دل کی جگہ ہم نے بار بار رکھا

    اسے بھی میں نے بہت خود پہ اختیار دیے

    اور اس طرح کہ بہت خود پہ اختیار رکھا

    دکھوں کا کیا ہے مجھے فکر ہے کہ اس نے کیوں

    بچھڑتے وقت بھی لہجے کو خوش گوار رکھا

    ہوا چراغ بجھانے لگی تو ہم نے بھی

    دیے کی لو کی جگہ تیرا انتظار رکھا

    چھپا کے رکھ لیے اندر کے اپنے دکھ محسنؔ

    اور اپنی ظاہری حالت کو بھی سنوار رکھا

    مأخذ:

    shor bhi sannata bhi (rekhta website) (Pg. 52)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے