میں اس کی آنکھوں سے چھلکی شراب پیتا ہوں

حسرتؔ جے پوری

میں اس کی آنکھوں سے چھلکی شراب پیتا ہوں

حسرتؔ جے پوری

MORE BYحسرتؔ جے پوری

    میں اس کی آنکھوں سے چھلکی شراب پیتا ہوں

    غریب ہو کے بھی مہنگی شراب پیتا ہوں

    مجھے نشے میں بہکتے کبھی نہیں دیکھا

    وہ جانتا ہے میں کتنی شراب پیتا ہوں

    اسے بھی دیکھوں تو پہچاننے میں دیر لگے

    کبھی کبھی تو میں اتنی شراب پیتا ہوں

    پرانے چاہنے والوں کی یاد آنے لگے

    اسی لئے میں پرانی شراب پیتا ہوں

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے