Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

آج کی عورت

کومل راجہ

آج کی عورت

کومل راجہ

MORE BYکومل راجہ

    ارے

    سندھ کے سادھو صوفی

    ارے

    ہند کے مرد مومن

    کیا تم اب بھی سوچ رہے ہو

    ہندی ناری کہلائے وہ

    جو ہو اپنے پی کی داسی

    پی کی داسی

    پی کی داسی والی باتاں

    ہو گئیں اب تو باسی مورکھ

    آج کی ناری عورت ہو گئی

    فریڈم جھنڈا چیت مہینہ

    کون ڈوپٹہ کس نے چھینا

    جھمکا کاجل گجرا وجرا

    تیاگ کے عورت باغی ہو گئی

    آج کی عورت باغی ہے رے

    کیا تم اب بھی سوچ رہے ہو

    باغی عورت کہلائے وہ

    جو ہو پی کے عشق میں باغی

    پی کے عشق میں باغی مورکھ

    ہا ہا سادے شاعر مورکھ

    آج کی عورت بے بی ہو گئی

    سٹا دارو کمرہ چابی

    نین شرابی ہونٹ گلابی

    ہاتھ میں ٹھرا منہ پہ گالی

    خود کے عشق میں باغی بے بی

    کرماں والی کرماں والی

    کیا تم اب بھی سوچ رہے ہو

    کرماں والی کہلائے وہ

    جو ہو پی کے من کی ساقی

    پی کے من کی ساقی مورکھ

    ہاہا ہاہا پی کے ہاہا

    آج کی عورت لیفٹ کی رند ہے

    آج کی عورت رائٹ کی کنگ ہے

    خود سر عاقل بالغ سرکش

    حور حرامی زہر کی ترکش

    کھا جائے گی کچا چبا کر

    آج کی ہندی ہندہ ہو گئی

    حوا کی بیٹی زندہ ہو گئی

    ارے

    سندھ کے سادھو صوفی

    ارے

    ہند کے مرد مومن

    کیا تم اب یہ سوچ رہے ہو

    حوا کی بیٹی مر گئی یا پھر زندہ ہو گئی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے