Agha Shayar Qazalbash's Photo'

آغا شاعر قزلباش

1871 - 1940 | دلی, انڈیا

آخری کلاسیکی دور کے اہم شاعر، داغ دہلوی کے شاگرد

آخری کلاسیکی دور کے اہم شاعر، داغ دہلوی کے شاگرد

آغا شاعر قزلباش

غزل 21

اشعار 13

پہلے اس میں اک ادا تھی ناز تھا انداز تھا

روٹھنا اب تو تری عادت میں شامل ہو گیا

  • شیئر کیجیے

ملنا نہ ملنا یہ تو مقدر کی بات ہے

تم خوش رہو رہو مرے پیارے جہاں کہیں

  • شیئر کیجیے

بڑے سیدھے سادھے بڑے بھولے بھالے

کوئی دیکھے اس وقت چہرا تمہارا

  • شیئر کیجیے

تم کہاں وصل کہاں وصل کی امید کہاں

دل کے بہکانے کو اک بات بنا رکھی ہے

  • شیئر کیجیے

ابرو نہ سنوارا کرو کٹ جائے گی انگلی

نادان ہو تلوار سے کھیلا نہیں کرتے

  • شیئر کیجیے

کتاب 44

"دلی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے