Azra Waheed's Photo'

عذرا وحید

عذرا وحید

غزل 9

نظم 1

 

اشعار 8

دلوں میں تلخیاں پھر بھی نظر میں مسکراہٹ ہو

بلا کے حبس میں بھی ہو ہوا ایسا بھی ہوتا ہے

آگہی نے دیئے ابہام کے دھوکے کیا کیا

شرح الفاظ جو لکھی تو اشارے لکھے

تجھ کو پائیں تجھے کھو بیٹھیں پھر

زندگی ایک تھی ڈر کتنے تھے

بادلوں کی آس اس کے ساتھ ہی رخصت ہوئی

شہر کو وہ آگ کی بے رحمیاں بھی دے گیا

میں کون ہوں کہ ہے سب کانچ کا وجود مرا

مرا لباس بھی میلا دکھائی دیتا ہے

کتاب 1

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے