شاہد ذکی

غزل 18

اشعار 11

میں آپ اپنی موت کی تیاریوں میں ہوں

میرے خلاف آپ کی سازش فضول ہے

میں بدلتے ہوئے حالات میں ڈھل جاتا ہوں

دیکھنے والے اداکار سمجھتے ہیں مجھے

یار بھی راہ کی دیوار سمجھتے ہیں مجھے

میں سمجھتا تھا مرے یار سمجھتے ہیں مجھے

روشنی بانٹتا ہوں سرحدوں کے پار بھی میں

ہم وطن اس لیے غدار سمجھتے ہیں مجھے

میں تو خود بکنے کو بازار میں آیا ہوا ہوں

اور دکاں دار خریدار سمجھتے ہیں مجھے

تصویری شاعری 3

 

متعلقہ شعرا

"سیالکوٹ" کے مزید شعرا

 

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے