aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

انہیں سوال ہی لگتا ہے میرا رونا بھی

عزیز قیسی

انہیں سوال ہی لگتا ہے میرا رونا بھی

عزیز قیسی

MORE BYعزیز قیسی

    انہیں سوال ہی لگتا ہے میرا رونا بھی

    عجب سزا ہے جہاں میں غریب ہونا بھی

    یہ رات رات بھی ہے اوڑھنا بچھونا بھی

    اس ایک رات میں ہے جاگنا بھی سونا بھی

    وہ حبس دم ہے زمیں آسماں کی وسعت میں

    کہ ایسا تنگ نہ ہوگا لحد کا کونا بھی

    عجیب شہر ہے گھر بھی ہیں راستوں کی طرح

    کسے نصیب ہے راتوں کو چھپ کے رونا بھی

    کھلے میں سوئیں گے پھر موتیا کے پھولوں سے

    سجاؤ زلف بسا لو ذرا بچھونا بھی

    نجات روح بھی ارزاں نشور دل کی طرح

    ہوا ہے سہل ضمیروں کے داغ دھونا بھی

    عزیزؔ کیسی یہ سوداگروں کی بستی ہے

    گراں ہے دل سے یہاں کاٹھ کا کھلونا بھی

    مأخذ:

    Rooh-e-Ghazal,Pachas Sala Intekhab (Pg. 262)

      • اشاعت: 1993
      • ناشر: انجمن روح ادب، الہ آباد
      • سن اشاعت: 1993

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے