Fasih Akmal's Photo'

فصیح اکمل

1944 | دلی, انڈیا

فصیح اکمل

غزل 16

اشعار 11

عمر بھر ملنے نہیں دیتی ہیں اب تو رنجشیں

وقت ہم سے روٹھ جانے کی ادا تک لے گیا

بہت سی باتیں زباں سے کہی نہیں جاتیں

سوال کر کے اسے دیکھنا ضروری ہے

ہماری فتح کے انداز دنیا سے نرالے ہیں

کہ پرچم کی جگہ نیزے پہ اپنا سر نکلتا ہے

مدعا اظہار سے کھلتا نہیں ہے

یہ زبان بے زبانی اور ہے

کتابوں سے نہ دانش کی فراوانی سے آیا ہے

سلیقہ زندگی کا دل کی نادانی سے آیا ہے

کتاب 6

 

آڈیو 12

آج دل بے_قرار ہے میرا

اثر اس کو ذرا نہیں ہوتا

اس وسعت_کلام سے جی تنگ آ گیا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"دلی" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے