Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر
noImage

مرزا محمد تقی ہوسؔ

1766 - 1855 | لکھنؤ, انڈیا

اودھ کے نواب ،آصف الدولہ کے ماموں زاد بھائی،کئی شاعروں کے سرپرست

اودھ کے نواب ،آصف الدولہ کے ماموں زاد بھائی،کئی شاعروں کے سرپرست

مرزا محمد تقی ہوسؔ

غزل 23

اشعار 20

آشنا کوئی نظر آتا نہیں یاں اے ہوسؔ

کس کو میں اپنا انیس کنج تنہائی کروں

رنگ‌ گل شگفتہ ہوں آب رخ چمن ہوں میں

شمع حرم چراغ دیر قشقۂ برہمن ہوں میں

  • شیئر کیجیے

زاہد کا دل نہ خاطر مے خوار توڑیئے

سو بار تو یہ کیجیے سو بار توڑیئے

  • شیئر کیجیے

سنتا ہوں نہ کانوں سے نہ کچھ منہ سے ہوں بکتا

خالی ہے جگہ محفل تصویر میں میری

  • شیئر کیجیے

نہ پایا وقت اے زاہد کوئی میں نے عبادت کا

شب ہجراں ہوئی آخر تو صبح انتظار آئی

کتاب 6

 

آڈیو 5

جنگلوں میں جستجوئے_قیس_صحرائی کروں

جوانی یاد ہم کو اپنی پھر بے_اختیار آئی

کیا مزا ہو جو کسی سے تجھے الفت ہو جائے

Recitation

"لکھنؤ" کے مزید شعرا

Recitation

Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

GET YOUR PASS
بولیے