Salam Machhli shahri's Photo'

سلام ؔمچھلی شہری

1921 - 1973

رومانی لہجے کے ممتاز مقبول شاعر

رومانی لہجے کے ممتاز مقبول شاعر

سلام ؔمچھلی شہری

غزل 18

نظم 29

اشعار 19

اے مرے گھر کی فضاؤں سے گریزاں مہتاب

اپنے گھر کے در و دیوار کو کیسے چھوڑوں

یوں ہی آنکھوں میں آ گئے آنسو

جائیے آپ کوئی بات نہیں

  • شیئر کیجیے

اب ماحصل حیات کا بس یہ ہے اے سلامؔ

سگریٹ جلائی شعر کہے شادماں ہوئے

کبھی کبھی عرض غم کی خاطر ہم اک بہانا بھی چاہتے ہیں

جب آنسوؤں سے بھری ہوں آنکھیں تو مسکرانا بھی چاہتے ہیں

غم مسلسل ہو تو احباب بچھڑ جاتے ہیں

اب نہ کوئی دل تنہا کے قریں آئے گا

کتاب 11

متعلقہ شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI