Shabnam Rumani's Photo'

شبنم رومانی

1928 - 2009 | پاکستان

شبنم رومانی

غزل 17

نظم 6

اشعار 4

زندگی خواب دیکھتی ہے مگر

زندگی زندگی ہے خواب نہیں

  • شیئر کیجیے

تیری تابش سے روشن ہیں گل بھی اور ویرانے بھی

کیا تو بھی اس ہنستی گاتی دنیا کا مزدور ہے چاند؟

اپنی مجبوری کو ہم دیوار و در کہنے لگے

قید کا ساماں کیا اور اس کو گھر کہنے لگے

مجھے یہ زعم کہ میں حسن کا مصور ہوں

انہیں یہ ناز کہ تصویر تو ہماری ہے

کتاب 13

ویڈیو 8

This video is playing from YouTube

ویڈیو کا زمرہ
کلام شاعر بہ زبان شاعر

شبنم رومانی

شبنم رومانی

شبنم رومانی

Shabnam Rumani at a mushaira

شبنم رومانی

آدھا جیون بیتا آہیں بھرنے میں

شبنم رومانی

تمام عمر کی آوارگی پہ بھاری ہے

شبنم رومانی

میں نے کس شوق سے اک عمر غزل_خوانی کی

شبنم رومانی

متعلقہ شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

GET YOUR FREE PASS
بولیے